خطرہ کی تشخیص

خطرہ کی تشخیص

مارجن پر زرمبادلہ کی ٹریڈنگ کرنے میں اعلی درجہ کے خطرات شامل ہوتے ہیں، اور تمام سرمایہ کاروں کے لئے موزوں نہیں ہو سکتی ہیں۔ زرمبادلہ میں ٹریڈ کرنے کا فیصلہ کرنے سے پہلے، آپ کو دھیان سے اپنے سرمایہ کاری کے مقاصد، تجربہ اور خطرے کی رغبت کی سطح پر غور کرنا چاہئِے۔ اس بات کا امکان موجود ہے کہ آپ کو اپنی کچھ سرمایہ کاری یا تمام کا نقصان ہو جائے اور اس وجہ سے آپ کو اس رقم کی سرمایہ کاری نہیں کرنا چاہئیے حو آپ ھونے کے متحمل نہیں ہو سکتے ہیں۔ آپ کو غیرملکی زر مبادلہ کی ٹریڈنگ کے ساتھ منسلک تمام خطرات سے آگاہ ہونا چاہئے، اور کوئی شک ہو تو آزاد اور مناسب لائسنس یافتہ مالیاتی مشیر سے مشورہ حاصل کرنا چاہیے۔

CFD میں سرمایہ کاری کرنے کے خطراتCFD، خصوصاً جب انتہائی لیوریج شدہ ہو (جتنا زیادہ CFD کا لیوریج ہو گا، یہ اتنا پرخطر ہو گا)، خطرے کی ایک بہت ہی اعلی سطح کا حامل ہو گا۔ یہ کوئی معیاری مصنوعات نہیں ہیں مختلف CFD مہیا کار اپنی شرائط و ضوابط اور اخراجات کے حامل ہیں۔ تاہم، عام طور پر، وہ زیادہ تر خوردہ سرمایہ کاروں کے لئے موزوں نہیں ہیں۔

لیکویڈیٹی خطرہ

لیکویڈیٹی آپ کی ٹریڈ کرنے کی صلاحیت کو متاثر کرتی ہے۔ یہ خطرہ ہے کہ آپ کا CFD یا اثاثہ کی فروخت اس وقت نہیں ہو سکتی ہے
جب آپ ٹریڈ کرنا چاہتے ہیں (نقصان سے بچنے کیلئے، یا ایک منافع بنانے کیلئے)۔

تعمیل کا خطرہ

تکمیل کا خطرہ اس حقیقت کے ساتھ منسلک ہے کہ ٹریڈز فوری طور پر واقع نہیں ہو سکتا ہے۔ مثال کے طور پر، اس لمحہ جب آپ نے کوئی آرڈر پیش کیا اور وہ لمحہ جب اس کی تعمیل کی گئی کے مابین وقت میں وقفہ ہو سکتا ہے۔

انٹرنیٹ ٹریڈنگ خطرات

انٹرنیٹ پر مبنی ٹریڈنگ سسٹم استعمال کرنے میں چند خطرات بھی پنہاں ہیں لیکن یہ خطرات صرف ہارڈ ویئر، سافٹ ویئر اور انٹرنیٹ کنکشن کے ناکام ہونے تک ہی محدود نہیں۔ کیونکہ Orbex سگنل کے استحکام، انٹرنیٹ کے ذریعے اس کی وصولی اور روٹنگ، آپ کے آلات کی تشکیل کاری یا کنکشن کے قابل اعتماد ہونے کو کنٹرول نہیں کرتا ہے اس لیے ہمیں انٹرنیٹ کے ذریعے ٹریڈنگ کرتے ہوئے ابلاغ میں ناکامی، بگاڑ یا تاخیر کا ذمہ دار نہیں ٹھہرایا جا سکتا ہے۔

تفہیم

کلائنٹ تسلیم کرتا ہے اور اقرار کرتا ہے کہ اس نے مندرجہ ذیل کو پڑھ، سمجھ لیا ہے اور اسطرح بنا کسی تحفظات کے مندرجہ ذیل کو قبول کرتا ہے:

  • مالیاتی انسٹرومنٹ (بشمول کرنسی کے جوڑے، CFD یا کوئی دوسری ماخوذ کردہ مصنوعہ) کی قدر کم ہو سکتی ہے اور ممکن ہے کلائنٹ سرمایہ کاری کردہ سے کم رقم وصول کر سکتا ہے یا مالیاتی انسٹرومنٹ کی قدر تیزی سے اتار چڑھاؤ ظاہر کر سکتی ہے۔
  • کسی مالیاتی انسٹرومنٹ کی گزشتہ کارکردگی اس کی موجودہ اور/یا مستقبل کی کارکردگی کی ضمانت نہیں دیتی؛ کسی انسٹرومنٹ کے گزشتہ اعداد و شمار کی بنیاد پر اس انسٹرومنٹ کی کارکردگی کی محفوظ پیشنگوئی نہیں کی جا سکتی اور نہ ہی مستقبل میں ہونے والے منافع کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے۔
  • ممکن ہے بعض مالیاتی انسٹرومنٹ فوری طور پر لیکویڈ نہ ہوں جس کی کئی وجوہات ہو سکتی ہیں جیسا کہ طلب میں کمی، کمپنی انہیں فروخت کرنے کی حالت میں نہ ہو یا اس مالیاتی انسٹرومنٹ کی قدر کے متعلق معلومات باآسانی دستیاب ہو یا اس مالیاتی انسٹرومنٹ سے متعلق زیادہ خطرہ لاحق ہو۔
  • جب کوئی مالیاتی انسٹرومنٹ کلائنٹ کے رہائشی ملک کی کرنسی کے علاوہ کسی کرنسی میں خریدا/بیچا جائے تو اس ملک کی شرح تبادلہ اس مالیاتی انسٹرومنٹ کی قدر، قیمت اور کارکردگی پر منفی اثر ڈال سکتی ہے۔
  • کسی غیر ملکی مارکیٹ کا مالیاتی انسٹرومنٹ کلائنٹ کے رہائشی ملک کی نسبت معمول سے زیادہ خطرات کا حامل ہو سکتا ہے۔ غیرملکی مارکیٹوں میں لین دین سے منافع یا نقصان کا تناظر بھی زر مبادلہ کی شرح میں اتار چڑھاؤ سے متاثر ہوتا ہے